سوزاک کے اسباب علامات اور علاج

سوزاک کے اسباب علامات اور علاج

سوزاک کے اسباب علامات اور علاج

 

نسخہ اُم الشفاء

اس میں پیشاب کی نالی میں زخم ہو جاتا ہے جس سے پیپ بہنے لگتی ہے اکثر زخم میں درد اور شدید جلن ہوتی ہے مرض کی شدت کے باعث نالی میں تنگی پیدا ہو کر مرض میں مزید اضافہ ہو جاتا ہے اس کے جرثومہ کو گونوریا کہتے ہیں ۔

سوزاک کے اسباب

سوزاک کے اساب میں پیشاب کی نالی  میں رطوبت کا اخراج بند ہو جاتا ہے کثرت مباشرت ،دوران حیض مباشرت کا فعل سرانجام دینا ، گرم و خشک اغذیہ کا کثرت استعمال یا ادویہ گرم شدید کا کشرت استعمال ، اغلام بازی ، مشت زنی کا استعمال ،زناکاری اس مرض کا خاص سبب ہے دوران حمل کی رطوبت مشلا لیکوریا وغیرہ کے اثر سے بھی سوزاک ہو جاتا ہے ۔

سوزاک کی علامات ۔

مرض لگنے کے تین یا چار دن سے لے کر بعض اوقات آٹھ یا دس دن میں علامات کا اظہار ہونا شروع ہو جاتا ہے کہ مریض تڑپ اٹھتا ہے پیشاب میں شدید جلن اور سخت درد ہوتا ہے پیشاب کے سوراخ سے سرخی مائل زرد پیپ خارج ہونے لگتی ہے پانچ یا چھ دن میں مرض میں شدت آ جاتی ہے جلن اور درد میں اضافہ ہو جاتا ہے اور پیپ گاڑھی ہونے لگتی ہے بعض اوقات اس قدر جلن ہو تی ہے کہ معمولی کپڑا بھی چھو جائے تو مریض تڑپ اٹھتا ہے  مریض پاؤں پھیلا کر چلتا ہے چہرہ پریشان حال ہو تا ہے ۔

سوزاک کا دیسی علاج

continue reading…

Share Button